"""""غزل"""""

Go down

"""""غزل"""""

Post by Mr.TaRaR on Thu Feb 01, 2018 5:04 pm

پیسہ بن جائے جب زباں صاحب
کس کو سچا کہیں وہاں صاحب

یہ غلامی ہے ناخداؤں کی
سوچ اپنی ہے اب کہاں صاحب

کس کی پھر سچ تلک رسائی ہو
جھوٹ پڑتا ہے درمیاں صاحب

چاہے عالم ، بزرگ ، ملا ہو
سب کے ہیں نو رتن بیاں صاحب

کون میرے جہان کی سوچے
اپنا اپنا ہے اب جہاں صاحب

ایک بس میرا گھر بچا لینا
پھونکئے اور سب مکاں صاحب

اب قلم ہو ، زبان ہو ، دل ہو
ان سے اٹھتا ہے بس دھواں صاحب

سب حقیقت سے منہ چھپاتے ہیں
یہاں بِکتے ہیں بس گماں صاحب

جھوٹ در جھوٹ جھوٹ ہے سارا
سچ ہے نا پید اب یہاں صاحب

مانا شیطاں زمیں پہ حاوی ہے
کاہے چپ ہے یہ آسماں صاحب

کیسے بولوں یہاں میں سچ ابرک
لوگ کہتے ہیں بد زباں صاحب

....................................اتباف ابرک

_________________
Mr.TaRaR
avatar
Mr.TaRaR
Super Moderater
Super Moderater

Posts : 12
Join date : 2017-11-11
Age : 16

Back to top Go down

Back to top


 
Permissions in this forum:
You cannot reply to topics in this forum
Copyright© 2017 ITDunya.Net. All rights reserved.Powered By iTMasTER